Friday, September 24, 2021

بھارتی جنگی طیارہ فیکٹری کا ملازم آئی ایس آئی سے خفیہ رابطوں کے الزام میں گرفتار

بھارتی پولیس کے مطابق انسداد دہشت گردی اسکواڈ کو بھارتی جنگی طیارہ فیکٹری کے اس ملازم کے آئی ایس آئی کے ساتھ مستقل رابطوں کی قابل اعتماد انٹیلی جنس رپورٹس ملی تھیں

بھارتی پولیس کے مطابق افواج پاکستان کے ادارے آئی ایس آئی کو بھارتی جنگی طیاروں کی تفصیلات فراہم کرنے کے الزام میں ہندوستان ایئروناٹکس لمیٹڈ کا ملازم گرفتار کر لیا گیا ہے۔ ریاست کے انسداد دہشت گردی اسکواڈ (اے ٹی ایس) کے ناشک یونٹ کو اس شخص کے بارے میں آئی ایس آئی کے ساتھ مستقل رابطوں کی قابل اعتماد انٹیلی جنس رپورٹس ملی تھیں ۔
 
بھارتی طیارہ ساز فیکٹری ہال کے  ناشک ڈویژن میں  ساختہ مگ سیریز کے طیاروں کی بحالی اور ایس یو 30 ایم کے آئی طیارے کی مرمت اور اوور ہال کی جاتی ہے۔
 
مہاراشٹر پولیس کے مطابق ہندوستان ایئروناٹکس لمیٹڈ کا ملازم یہ شخص بھارتی لڑاکا طیاروں اور ان کے مینوفیکچرنگ یونٹ کے بارے میں خفیہ معلومات افواج پاکستان کے خفیہ ادارے آئی ایس آئی کو فراہم کر رہا تھا۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ ریاست کے انسداد دہشت گردی اسکواڈ (اے ٹی ایس) کی ناسک یونٹ کو اس شخص کے بارے میں قابل اعتماد انٹلیجنس رپورٹس ملی ہیں کہ ملزم آئی ایس آئی کے ساتھ مستقل رابطے میں تھا۔
۔
۔
ناشک کے قریب اوجھر میں ایچ اے ایل کے طیارہ سازی یونٹ ، ایئر بیس اور مینوفیکچرنگ یونٹ کے اندرونی ممنوعہ علاقے میں تعینات ہال کے ایک آفیسر نے بتایا کہ 41 سالہ شخص کے خلاف آفیشل سیکریٹ ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ناشک اے ٹی ایس یونٹ کے عہدیداروں نے اسے ناشک میں واقع اس کے گھر سے گرفتار کیا ہے۔
 
انہوں نے بتایا کہ اس کے قبضہ سے تین موبائل سیٹس کے ساتھ پانچ سم کارڈز اور دو میموری کارڈز قبضے میں لے لئے گئے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ فونز اور سم کارڈز کو فراانزک سائنس لیبارٹری کو معائنہ کیلئے بھیجا گیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ ملزم کو جمعہ کے روز عدالت میں پیش کیا گیا ، اور اسے اے ٹی ایس کی تحویل میں 10 دن کیلئے ریمانڈ پر بھیج دیا گیا ہے۔
 
بھارتی   طیارہ ساز ڈویژن ناشک میں لائسنس کے تحت مگ 21 ایف ایل طیاروں اور کے 13 میزائلوں کی تیاری کیلئے 1964 میں قائم کیا گیا ۔  یہ  ادارہ اوجاڑ میں ناسک سے 24 کلومیٹر اور ممبئی سے 200 کلومیٹر دور واقع ہے۔
۔
۔
بھارت کے اس طیارہ ساز ڈویژن نے روسی لائسنس کے تحت مگ 21 ایم ، مِگ 21 بی آئی ایس ، مِگ 27 ایم اور جدید ایس یو 30 ایم کے آئی سمیت مگ طیروں کے مختلف ورژن بھی تیار کیے ہیں ۔ ایچ اے ایل کے اس ڈویژن میں مگ سیریز کے جنگی طیارے کی اوور ہالنگ ، ایس یو 30 ایم کے آئی طیارے کی مرمت اور اوور ہالنگ بھی کی جاتی ہے۔
رپورٹ : فاروق درویش
FAROOQ RASHID BUTThttp://thefoji.com
Chief Editor of Defence Times and Gulf Asia News, a defence analyst, journalist, patriotic blogger, poet and freelancer WordPress web designer. A passionate flag holder of world peace

DEFENCE ARTICLES

پاکستان ائر فورس میں بہت جلد شامل ہونے والا اگلا ملٹی رول فائٹر جیٹ ، پاکستان کے...
عالمی پریس اور پاک فضائیہ نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ پاکستان خطے میں فوجی...
جے ایف - 17 کے جدید ورژن بلاک 3  میں فضا سے فضا میں مار کرنے والے...

Comments

Leave a Reply

DEFENCE NEWS

MY INSTAGRAM

spot_img

DEFENCE BLOG

Afghan Taliban and the Red Storm of the Green Revolution

Forty years ago, the Pakistani military leadership planned to...

23 Indian soldiers killed, 31 wounded in Maoist militant attack

At least 23 Indian soldiers have been killed and...

Pakistan’s nuclear capable Shaheen 1-A ballistic missile

In this March , Pakistan conducted a successful flight...

Ten Reasons Why Pakistani JF-17 Thunder defeated Indian Tejas in Global Market

According to world-renowned air defense experts, the Pakistani JF-17...